Monday, 3 October 2011

موسم

فیس بک پر ایک ساتھی نے موسم کے بارے میں لکھا "موسم بہت اچھا ہے میری طرف "اور پھر یس موسم کو اپنے اندر اترنے کی خواہش کا اظہار کیا -تو مجھے خیال آیا کہ موسم تو ہمارے یہاں بھی بہت اچھا ہے-ہوا یا پروائی ٹھنڈی ٹھنڈی ہو کر چل رہی ہے-ایسے میں سب دوست مل کر ساون کے گیت گاتے ہیں-جو دور گئے -پردیس گئے -وہ سب بہت یاد آتے ہیں -ساون کا موسم بھی ہے عجب-کہیں وصل کی پریت جگاتا ہے-کہیں ہجر کا عذاب بڑھاتا ہے-کوئی اس موسم میں ٹھہر جاتا ہے-کوئی خود میں خود ہی چلنے لگتا ہے-کسی کو یار کی ندا سنائے دینے لگتی ہے-تو کسی کو یار نہ دے دکھائی-سب اپنے اپنے خواب لئے -سب اپنے اپنے عذاب لئے،کاندھوں پر دکھوں کی صلیب دھرے -جیوں کو بتائے جاتے ہیں-

No comments:

Post a comment